Kindle ہم بھی وہاں موجود تھے PDF ò بھی Ç memovende.co

Hum Bhi Wahan Mojod Thay ہم بھی وہاں موجود تھے by Hum Bhi Wahan Mojod Thay ہم بھی وہاں موجود تھے book Read reviews from the world's largest community for readers An autobiography of Lt Gen Retd ہم بھی وہاں موجود تھے PDF بھی ہم بھی وہاں موجود تھے PDF بھی وہاں موجود PDFEPUB وہاں موجود Kindle ہم بھی eBook Hum Bhi Wahan Mojod Thay ہم بھی وہاں موجود تھے by Hum Bhi Wahan Mojod Thay ہم بھی وہاں موجود تھے book Read reviews from the world's largest community for readers An autobiography of Lt Gen Retd ہم بھی و ہم بھی وہاں موجود تھے PDF بھی ہم بھی وہاں موجود تھے PDF بھی وہاں موجود PDFEPUB وہاں موجود MOBI ☆ ہم بھی MOBI Hum Bhi Wahan Mojod Thay ہم بھی وہاں موجود تھے by Hum Bhi Wahan Mojod Thay ہم بھی وہاں موجود تھے book Read reviews from the world's largest community for readers An autobiography of Lt Gen Retd ہم بھی و ہم بھی وہاں موجود تھے وجود تمام مواد کے جملہ حقوق محفوظ ہیں ابھی ابھی شمالی وزیرستان میں دہشتگردوں کیخلاف آپریشن کہیں ہم بھی چور تو نہیں Jeevey Pakistan کہیں ہم بھی چور تو نہیں ؟ تحریر اے حق ۔ لندن ،،آپ،اس،وہ،اور، تم، جیسے الفاظ پرہماری زبانیں اورقلم توہمیشہ تیرکی طرح چلتے ہیں لیکن بات جب ،،ہم،،پریا،ہم ،جیسے کسی دوسرے پیارے لفظ کی تقدس اورحرمت کی آتی ہے تواس وقت ہم بھی وہاں موجود تھے ‘‘ Today's Hamid Mir Column March Urdu Columns Jang Columns ’’ہم بھی وہاں موجود تھے ‘‘ امریکا نے چاند پر بھی فوجی اڈے کا منصوبہ بنالیا ایکسپریس Il y a heuresتکنیکی طور پر چاند انسانی رہائش کےلیے بالکل بھی موزوں نہیں، لہذا پہلے مرحلے میں وہاں خودکار یا نیم خودکار روبوٹس بھیجے جائیں گے جو وہاں امریکی فوجیوں کےلیے محفوظ رہائش گاہیں اور فوجی اڈّے تعمیر کریں گے۔ اس کے بعد ہی ہم بھی موجود تھے وہاں jangcompk ہم بھی موجود تھے وہاں اپریل ، شئیر کریں ; ٹویٹ کریں; شئیر کریں; ٹویٹ کریں; اہم خبریں; ادارتی صفحہ; اسپورٹس; یورپ سے; دنیا بھر سے; ملک بھر سے; شہر قائد شہر کی آواز; دل لگی; بزنس; تعلیم صحت خواتین; سندھ بھر سے; مراسلات; عرض ت ہم تب بھی دہائی دے رہے ہوں گے ایکسپریس اردو ہم تب بھی دہائی دے رہے ہوں گے شیئر ٹویٹ اگر یہی رفتار بلا روک ٹوک رہی تو اگلے دس برس میں کشمیر کا شمار بھی ان علاقوں میں ہوگا جہاں آج مسلمان اقلیت میں ہیں۔ وسعت اللہ خان ہفتہ جولائ شیئر ٹویٹ شیئر ای میل تبصرے مزید مردے وہاں نوکریاں یہاں ہم سب ان کی وہاں کوئی رشتہ داری یا زمین جائیداد نہیں ان کا جینا مرنا بھی اس دھرتی کے ساتھ ہے۔ ان پر بلوچستان کے لوکل قبائل اعتراض نہیں کرتے کیونکہ وہ اسی سسٹم میں پڑھ کر آتے ہیں اور پھر سب کا آپس میں کسی پوسٹ کے لیے مقابلہ بنتا ہم نبھاتے ہیںاپنا فرضوہاں 🌹🔥 جہاںموتبھیجانےسے Please comment like and subscribe zaroor karna ہم بھی وہاں موجود تھے PDF بھی ہم بھی وہاں موجود تھے PDF بھی وہاں موجود PDFEPUB وہاں موجود Kindle ہم بھی eBook Hum Bhi Wahan Mojod Thay ہم بھی وہاں موجود تھے by Hum Bhi Wahan Mojod Thay ہم بھی وہاں موجود تھے book Read reviews from the world's largest community for readers An autobiography of Lt Gen Retd ہم بھی و ہم بھی وہاں موجود تھے | Book Store ہم بھی وہاں موجود تھے ₨ Author LT COLD R ABDUL MAJEED MALIK ہم بھی وہاں موجود تھے uantity Buy Now Reviews Discussions Reviews There are no reviews yet Be the first to review “ہم بھی وہاں موجود تھے” Cancel reply Your email address will not be published Reuired fields are marked Your rating Your review Name ہمیں بھی وہاں لے چلو geourdufr ہمیں بھی وہاں لے چلو ہمیں بھی وہاں لے چلو تحریرامتیازعلی شاکرلاہور ایک وہ دن تھا جب فروری میاں نوااز شریف نے پیپلز پارٹی کی وفاقی حکومت کو تنقید کانشانہ بناتے ہوئے ہم بھی وہاں موجود تھے PDF بھی ہم بھی وہاں موجود تھے PDF بھی وہاں موجود PDFEPUB وہاں موجود MOBI ☆ ہم بھی MOBI Hum Bhi Wahan Mojod Thay ہم بھی وہاں موجود تھے by Hum Bhi Wahan Mojod Thay ہم بھی وہاں موجود تھے book Read reviews from the world's largest community for readers An autobiography of Lt Gen Retd ہم بھی و ’آپ وہاں سے ہیں جہاں سب کی داڑھی ہے‘ | Urdu News – اردو نیوز ’آپ وہاں سے ہیں جہاں سب کی داڑھی ہے‘ جمعہ اگست مشہور پاکستانی اداکارہ مہوش حیات نے اپنے ایک حالیہ انٹرویو میں کہا ہے کہ وقت آگیا ہے کہ ہالی وڈ اور بالی وڈ میں پاکستانیوں کی 'غیر جانب دار' تصویر دکھائی جائے۔ کم Asma ureshi ہم وہاں ہیں جہاں سے ہم کو بھی ہم وہاں ہیں جہاں سے ہم کو بھی Asma ureshi Project Manager Software Developer Dubai UAE ہم وہاں ہیں جہاں سے ہم کو بھی کچھ ہماری خبر نہیں آتی مرتے ہیں آرزو میں مرنے کی موت آتی ہے پر نہیں آتی از مرزا اسد اللہ خان غالب Posted by Asma ureshi at AM Email This BlogThis مردے وہاں نوکریاں یہاں ہم سب ان کی وہاں کوئی رشتہ داری یا زمین جائیداد نہیں ان کا جینا مرنا بھی اس دھرتی کے ساتھ ہے۔ ان پر بلوچستان کے لوکل قبائل اعتراض نہیں کرتے کیونکہ وہ اسی سسٹم میں پڑھ کر آتے ہیں اور پھر سب کا آپس میں کسی پوسٹ کے لیے مقابلہ بنتا لاہور ادبی میلہ، ہم بھی وہیں موجود تھے ہم سب ہم بھی کچھ دیر لائن میں لگنے کے بعد باہر آگئے۔ تھوڑی دیر پشتو موسیقی پر نوجوانوں کا اتان ڈانس دیکھا، وہاں کسی نے بتایا کہ ہال نمبر تین میں وسطیٰ ایشیاپر سیشن جاری ہے اور اچھی بات یہ ہے کہ وہاں مسائل بیروت کی طرح کراچی میں بھی تحریک ہم سب ء کی دہائی میں کراچی کا ذکر کرتے ہوئے اکثر لبنان کے دارالحکومت بیروت کے حوالے دئیے جاتے تھے۔وہاں کئی برس تک جاری رہی خانہ جنگی کی وجوہات کراچی کے واقعات میں بھی تلاش کی جاتیں۔اس کے علاوہ تذکرہ اکثر ’’ہانگ کانگ‘‘ کا


10 thoughts on “ہم بھی وہاں موجود تھے

  1. says:

    Overall a brief narrative about Pakistan history Nothing new in the book mostly the stuff reported in news is consolidated No inside story or analysis good for those who wants to read about the major events of pakistan history in a single book


  2. says:

    I want to read it


  3. says:

    i want to read it


  4. says:

    to learn main events of history of pakistan


  5. says:

    lame book that tells less about the time of General in service and focuses on his not so successful political career


  6. says:

    One of the good books I have read on Pakistan political history One important pros of this book and specifically of Lt Gen R Abdul Majeed Malik is that he wrote book with utmost honesty to his own belief and admitted mistakes boldly which I have not witnessed in history books in which author attempts to explain and justify all wrong doings so I must give a due credit to author for his open confession of mistakes and honesty Gen Malik although started his military career during British Raj but he was no exception to the breed of fundamentalist military elite which later created Talibans Like most of the ex Generals he could not get out of the narration of Islam and Pakistan its strongest fort ideology which is an absolute delusion Most of the readers might find him very inconsistent in his self justification of being the righteous ones and in the same book prasising Zias take over of 77 in his letter to the dictator He won NA 43 60 Chakwal constituency five times consecutively which is a big milestone for ones political career without having any previous political affiliation but one thing I observed is that despite being elected five times even during his favorite PMLN government he did not carry out any significant change in his constituency or may be he could not find any of those worth mentioning in this book except the electrification of few remote towns and villages Overall a good read and very immersive one